ریکٹر کا پیغام

وائس ایڈمرل تنویر فیض ایچ آئی(ایم) (ریٹائرڈ)ریکٹربحریہ یونیورسٹی

بحریہ یونیورسٹی عوامی سطح پر پاکستان کی ایک معروف پبلک سیکٹر یونیورسٹیوں میں سے ایک ہے   جو کے آج کے درپیش مسائل اور حالات سے نمٹنے کے لیے وقف ہے  ۔

یونیورسٹی کے کیمپس، تحقیقی ادارے اور کالج    پورے پاکستان میں ہیں جوکےآج کے نوجوانوں کی تربیت کر کے کل کے رہنما بنانے کی میں ایک اہم کردار ادا کر ریے ہیں۔ بحریہ یونیورسٹی تخلیقی خیلات کے بانی اور ذہین لوگوں کو اکھٹا کر کے انہیں ماحول اور ٹیکنالوجی فراہم کرتی ہے اور ساتھ ہی ساتھ استانزہ، طلباء اور طلبات کی حوصلہ افزائی انہیں نئی دریافت، ایجادات، دنیا کی خدمت کرنے اور آگے بڑھنے کی قوت بخشتی ہے۔ بحریہ یونیورسٹی کا نظریہ ہے کہ اس یونیورسٹی کو ملک کا سب سے بہترین تعلیمی ادارہ بنایں ۔.اس نقطہ نظو  کو حاصل کرنے کے لیے ہمیں اپنے نظریات کو ساتھ ہی ساتھ عملی بھی بنانا ہے۔ ہم طلباء و طالبات کی تحقیقی صلاحیتوں کو فروغ دینے کے لیے تمام دروازے کھول رہے ہیں اور اسی مقصد کے لیے ہم یونیورسٹی اور مستند اداروں کے درمیان مستقل روابط قائم کر رہے ہیں تاکہ وہ اپنے تعلیمی علم کو عملی منصوبوں میں استعمال کر سکیں۔

ہم اس طرف بھی غور کررہے ہیں کہ تعلیم کے ساتھ ساتھ کردار ، شرافت، دیانت اور ایک دوسرے کے لیے جینا اچھے اقدار کے لیے انتہای اہم ہے۔ ہم اس بات پر یقین رکھتے ھیں کہ نوجوان یہ کہیں کہ وہ اپنی منزل کی تشکیل کا ارادہ رکھتے ھیں تو ہم انکی اس تیاری میں مدد اور صلاحیتوں کی دریافت میں مدد کریں اور وہ اپنے اردگرد کی دنیا پر بھی نظر دوڑایں اور مثبت اثر ڈالیں۔ پاکستان کی غیر معمولی اعلی نوجوان نسل کی آبادی کے لیے ہمیں یہ بہت اچھا موقع ملا ہے کہ ہم انکی پرجوش حوصلہ افزائ کے لیے ایک کردار ادا کریں تاکہ وہ معاشرے میں مثبت کردار ، خدمت خلق اور ان میں یہ صلاحیت بھی اجاگر کریں کہ وہ اس قابل ہو جائیں۔ کیو نکہ انکی حقیقی تکمیل   کسی بھی انسان کی زندگی میں اپنے جیسے دوسرے انسانوں کی خدمت میں ہے۔

ہم ایسے مستقبل کی جانب گامزن ہیں جس میں تعلیمی اداروں کو تیزی سے پرکھا جائے گا اور انکی وہ تعلیمی میعاد جو وہ مہیا کرتے ھیں اور اانکو پروان چڑھانے میں اور پھر وہ اپنی تعلیم کے حصول سے اپنی قائدانہ صلاحیتوں کا   چناؤ کرتے ھیں اور ہم   بحریہ یونیورسٹی میں انہی منصوبوں کی تکمیل کی لیے مسلسل کوشاں ھیں۔

میں آپ کو اس ویب سائٹ کے ذریعے یہ دعوت دیتا ہوں کہ آپ بحریہ یونیورسٹی کا دورہ کریں یا خود تشریف لائیں ۔